زبان تبدیل کریں
کسی موضوع کے تحت،آیات کی تقسیم(۲) دیکھیں
کسی موضوع کے تحت،آیات کی تقسیم(۲)

تیسرا طریقہ یہ ہے کہ خود اللہ کو محور قرار دیں اور قرآنی معارف کی تقسیم بندی عرض میں نہیں بلکہ ایک دوسرے کے طول میں انجام دیں یعنی قرآنی معارف کو

مأخذ تفسیر قرآن کی وضاحت دیکھیں
مأخذ تفسیر قرآن کی وضاحت

زمانے کی تیز رفتاری اور حالات کی تبدیلی کے پیش نظر ضروری ہے کہ قرآن کریم کو ہر زمانے کے لوگوں کے فہم و درک کے مطابق تفسیر کریں، تاکہ قرآن کے

تاریخ تفسیر قرآن کی وضاحت(۲) دیکھیں
تاریخ تفسیر قرآن کی وضاحت(۲)

تابعین کے دور میں معروف مفسرین ١۔ سعید بن جبیر :تابعین کے مشہور ومعروف مفسرین میں سے ایک تھے جنہوں نے اپنی تفسیر کے اصول وضوابط کو جناب ابن عباس

تاریخ تفسیر قرآن کی وضاحت(۱) دیکھیں
تاریخ تفسیر قرآن کی وضاحت(۱)

ہم تفسیر قران کے حوالے سے زمانے کو تین قسموں میں تقسیم کرسکتے ہیں : ١ ) زمان معصومین ۔ ٢ ) زمان اصحاب۔ ٣ ) زمان تابعین و ما بعد الی زماننا ہذا۔

مشہور تفاسیرکی معرفی دیکھیں
مشہور تفاسیرکی معرفی

الف : اہل سنت کی مشہور ومعروف تفاسیر: جامع القرآن فی تفسیر القرآن — ابن جرید طبری تفسیر بحر العلوم — ابن لیث سمر قندی الکشف والبیان عن

تفسیر قرآن کے اقسام(2) دیکھیں
تفسیر قرآن کے اقسام(2)

٣ ) تیسری دلیل: ایسی تفسیر کے قائلین نے بہت سی احادیث اور روایات کو نقل کیاہے جوآیات کی تفسیر میں اصحاب کے درمیان اختلاف ہونے کو بیان کرتی ہے ، جس

تفسیر قرآن کے اقسام(1) دیکھیں
تفسیر قرآن کے اقسام(1)

الف: تفسیر بالرّای ب: تفسیر غیر بالراّی تفسیر بالرای یعنی آیات کو مفسر اپنے آرای حدسیہ کے مطابق تفسیر کرنا چاہے تفسیر قرآن کے اصول و ضوابط کے

مقدمہ تفسیر قرآن(۲) دیکھیں
مقدمہ تفسیر قرآن(۲)

مؤلف: محمد باقرمقدسی ٢۔ اصطلاحی معنی: کلام الہی کے و ہ حصّے جس کے آغاز اور انجام معین ہونے کے علاوہ ہر آیت اپنی مخصوص جگہ میںگامزن ہے، اس کو

مقدمہ تفسیر قرآن(۱) دیکھیں
مقدمہ تفسیر قرآن(۱)

مؤلف: محمد باقرمقدسی اسامی قرآن کا تصور قرآن پاک کے اسامی اور ناموں کے بارے میں کتاب اور سنت کے پیروکاروں اور بہت سارے محققین نے مفصل کتاب ،

کاپی هوچکا
مہربانی فرما کر پہلے لاگ ان کریں