زبان تبدیل کریں
کاتبان وحی دیکھیں
کاتبان وحی

جب قرآن کے نزول(وحی) کا آغاز ہوا تو پیغمبر اکرم (ص) نے سب سے پہلے اس کی حفاظت کی خاطر اپنے دور کے کاتبین کو جمع کیا اور آیات قرآنی کو لکھنے اور ضبط

قرائت قرآن کی اجمالی وضاحت دیکھیں
قرائت قرآن کی اجمالی وضاحت

علوم قرآن کے مہمترین اور پیچیدہ ترین مسائل میں سے ایک قرائت قرآن سمجھا جاتا ہے، جس کے متعلق بہت سارے محققین نے مقالے کتابیں لکھی ہیں،لہذا شاید

تدوین قرآن کا پس منظر(۲) دیکھیں
تدوین قرآن کا پس منظر(۲)

دوسرا نظریہ: حضرت علی (ع) کے ہاتھوں قرآن کی تدوین گذشتہ نظریہ کی وضاحت کرتے ہوئے ثابت کیاگیاہے کہ قرآن کی تدوین حضرت پیغمبر اکرم (ص) کی حیات میں

تدوین قرآن کا پس منظر(۱) دیکھیں
تدوین قرآن کا پس منظر(۱)

پہلا نظریہ : قرآن کی جمع آوری کے متعلق کئی اقوال اورنظریے موجود ہیں، اور قرآن کی تدوین اور جمع آوری کا مسئلہ بہت ہی اہم مسئلہ ہے ،علوم قرآن کے

اقسام قراأات دیکھیں
اقسام قراأات

سیوطی مرحوم نے ابن الجزری سے نقل کرتے ہوئے کہا کہ قرائت قرآن کے کئی اقسام ہیں، جیسے: متواتر، مشہور، آحاد، شاذ، موضوع ،و مدرج(۱ ) لیکن قراأات قرآن

اعجاز قرآن کا اجمالی تعارف دیکھیں
اعجاز قرآن کا اجمالی تعارف

علوم قرآن کے مباحث میں سے کچھ بہت مشکل اورپیچیدہ ہیں جسکی بناء پر اسلامی مکاتب فکر اورمحققین نے ہزاروں زحمتیں اٹھا کر فہم قرآن کی خاطر شب وروز

علومِ قرآن کی اصطلاح اور تقسیم بندی دیکھیں
علومِ قرآن کی اصطلاح اور تقسیم بندی

صدر اسلام ہی سے اہل علم ودانش صحابہ تابعین اور تبع تابعین علوم قرآن میں سے کسی ایک یا چند علوم میں مہارت رکھتے تھے اورانهوں نے خاص موضوعات میں

عُلومِ قرآن سے، کیا مراد هے؟(۲) دیکھیں
عُلومِ قرآن سے، کیا مراد هے؟(۲)

تالیف: ڈاکٹر سید عبدالوہاب طالقانی ابوالفرج عبدالرحمن بن علی بن جوزی بغدادی(متوفی ۵۹۴) نے ایک کتاب ” فُنُونُ الافنانِ فیِ عُلُومِ القُرآن”

عُلومِ قرآن سے، کیا مراد هے؟(۱) دیکھیں
عُلومِ قرآن سے، کیا مراد هے؟(۱)

تالیف: ڈاکٹر سید عبدالوہاب طالقانی علوم قرآن کو دوحصّوں میں تقسیم کیاجاتا هے: اولاً۔ وہ علوم جو قرآن سے ماخوذ ہیں اور جنہیں آیاتِ قرآن میں

کاپی هوچکا
مہربانی فرما کر پہلے لاگ ان کریں